آئی فون 12 سیریز نے ایپل کو دنیا کا سب سے نمایاں برانڈ بنا دیا۔

آئی فونز خصوصا آئی فون 12 کی ریکارڈ ترسیل کے مطابق، ایپل دنیا کا سب سے بڑا اسمارٹ فون برانڈ بن گیا ہے۔ 2020 کی چوتھی اور آخری سہ ماہی میں، کمپنی کی ترسیل میں نمایاں اضافہ دیکھا گیا ہے، اور ہواوے میں بڑے پیمانے پر کمی واقع ہوئی ہے۔

کاؤنٹرپوائنٹ کی ریسرچ رپورٹ کے مطابق، اس سہ ماہی کے دوران کپرٹنو کی کمپنی ایپل کے ڈیوائسز کی ترسیل میں 22 فیصد کا اضافہ دیکھا گیا ہے۔ ممکنہ طور پر اس کی ایک وجہ حال ہی میں جاری کردہ آئی فون 12 سیریز میں پہلی بار 5 جی کی حمایت بھی ہے۔ مزید یہ کہ مارکیٹ میں بڑھتی ہوئی طلب نے خاص طور پر ان لوگوں کے لئے جو اپنے ایپل آئی فون کے پرانے ماڈل سے اپ گریڈ کرنا چاہتے تھے، نے 2020 کی آخری سہ ماہی میں فروخت بڑھانے میں مدد کی ہے۔

2020 کی چوتھی سہ ماہی میں، ایپل کے آئی فون کی ترسیل 90 ملین یونٹ تک پہنچ گئی، جو دیگر اسمارٹ فون کمپنیوں کے مقابلے میں کافی زیادہ ہے۔ کمپنی نے دنیا بھر میں 23.4 فیصد مارکیٹ شیئر حاصل کیا ہے۔ کینالیز کے تجزیہ کار نکول پینگ نے کہا کہ "چین میں، ایپل نے ہواوے کے مارکیٹ شیئر پر قبضہ کرنے کا ایک بہترین موقع لیا، جبکہ ہواوے کی بنیادی طور پر سپلائی بہت کم ہے، حالانکہ ابھی بھی برانڈ کی طلب موجود ہے۔” ایپل کے سی ای او ٹم کک نے ایک انٹرویو میں کہا، "ہمارے پاس شہری چین میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والے تین سمارٹ فون تھے۔”

سال کی دوسری شش ماہی کے دوران نئے آئی فونز کے اجراء کی وجہ سے، چوتھا سہ ماہی در حقیقت کمپنی کے لئے بہترین ثابت ہوا۔ ایپل نے سام سنگ کو بھی پیچھے چھوڑ دیا، اس کے باوجود کہ جنوبی کوریا کے برانڈ میں بھی پچھلے سال کے مقابلے میں 6.2 فیصد اضافہ دیکھنے کو ملا جو 73.9 ملین یونٹ تک پہنچ گیا اور 19.1 فیصد کا مارکیٹ شیئر حاصل کیا۔ اضافی طور پر، امریکی پابندیوں کی وجہ سے ہواوے نے اپنی ترسیل پر ڈرامائی اثر ڈالا ہے جس کی وجہ سے ان کی کھیپ ریکارڈ 42.4 فیصد کم ہوکر 32.3 ملین یونٹ رہ گئی ہے۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: