پاکستان جون تک واٹس ایپ جیسی ایپ ” اسمارٹ آفس” لانچ کرے گا۔

واٹس ایپ کی نئی پرائیویسی پالیسی کے بارے میں جاننے کے فورا بعد ہی لوگوں نے ایپ کا استعمال ترک کرنا شروع کردیا اور سگنل اور ٹیلیگرام سمیت دیگر متبادل ایپس کی طرف جانا شروع کردیا۔ نئی پالیسی نے پاکستان میں بھی صارفین کو الجھن میں مبتلا کردیا ہے۔ اپنی قوم کی بہتر خدمت کے لئے، حکومت پاکستان نے جون 2021 تک "اسمارٹ آفس” کے نام سے اپنی ایک واٹس ایپ جیسی میسجنگ ایپ شروع کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔

وفاقی انفارمیشن ٹیکنالوجی (آئی ٹی) اور ٹیلی مواصلات کے وزیر امین الحق نے کہا ہے کہ ’اسمارٹ آفس‘ ایپ پاکستانی حکومت کے ذریعہ جون 2021 تک لانچ کردی جائے گی۔ ایپ ابتدائی طور پر صرف سرکاری ملازمین کے لئے دستیاب ہوگی اور بعد میں یہ عوام کے لئے دستیاب ہوگی۔

وزارت آئی ٹی کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں، وفاقی کابینہ نے سرکاری ملازمین کے لئے واٹس ایپ جیسی ایپ تیار کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔ انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ اب ذاتی ڈیٹا پروٹیکشن بل پر کام کو تیز کرنا ضروری ہوگیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت واٹس ایپ کی پالیسی اپ ڈیٹ کو لے کر صارفین کے خدشات سے پوری طرح واقف ہے۔ انہوں نے واٹس ایپ کی پالیسی اپ ڈیٹ کو قبول نہ کرنے پر صارف اکاؤنٹس کو حذف کرنا شروع کرنے کے اقدام پر بھی شدید تحفظات کا اظہار کیا۔

اپنے بیان میں انھوں نے کہا:

واٹس ایپ کو اپنی پالیسی کو اپ ڈیٹ کرنے سے پہلے صارفین سے رائے لینا چاہئے تھی… کسی بھی کمپنی کو اپنے فیصلوں کو رکاوٹوں کے ذریعے اپنے صارفین پر مسلط کرنے کی اجازت نہیں ہے۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: