آسانی سے کاروبار شروع کرنے کے معاملے میں پاکستان جنوبی ایشیا میں دوسرے نمبر پر ہے: ورلڈ بینک کی رپورٹ

عالمی بینک کی شائع کردہ تازہ ترین رپورٹ کے مطابق، کاروبار شروع کرنے میں آسانی کے معاملے میں پاکستان میں غیر معمولی بہتری دیکھی گئی ہے۔ پاکستان نے مسلسل دوسرے سال ورلڈ بینک کے ایز آف ڈوئنگ بزنس انڈیکس میں اپنی پوزیشن کو بہتر بنایا ہے۔ نیز، پاکستان نے عمدہ 28 پوائنٹس کے ساتھ اپنی پوزیشن کو بہتر بنایا ہے، وہ درجہ بندی میں 136 ویں پوزیشن سے 108 ویں نمبر پر آگیا ہے۔

رپورٹ کے 2020 ایڈیشن میں روشنی ڈالی جانے والے چھ اصلاحی نقطوں میں سے، پاکستان نے "کاروبار شروع کرنے” کے معیار میں سب سے زیادہ بہتری دکھائی ہے۔ اس میں کوئی شک نہیں، سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن پاکستان (ایس ای سی پی) کے ذریعہ اس تناظر میں بڑے پیمانے پر انقلاب برپا کیا جارہا ہے۔

اس انڈیکیٹر میں، پاکستان نے اپنی پوزیشن کو 130 سے ​​بڑھا کر 72 کر دیا ہے اور کامیابی سے جنوبی ایشیائی ممالک میں دوسری پوزیشن حاصل کرنے میں کامیاب ہوا ہے۔

ایس ای سی پی کے مطابق، یہ بہتری وفاقی سطح پر فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) اور ایمپلائز اولڈ ایج بینیفٹ انسٹی ٹیوشن (ای او بی آئی) کے ساتھ اور صوبائی سطح پر پنجاب اور سندھ کے کاروباری رجسٹریشن پورٹلز کے ساتھ ای سروسز کے انضمام کی وجہ سے ہوئی ہے۔

اس اصلاح کے نتیجے میں، کاروبار شروع کرنے کے طریقہ کار کی تعداد دس سے کم ہو کر پانچ ہوگئی ہے اور پاکستان "عالمی سطح پر دس اعلی اصلاح کاروں میں شامل ہے”۔

کوئی شک نہیں، یہ ایک ایسی بہتری ہے جو یقینی طور پر سب کے لئے کاروبار دوست ثقافت میں اضافہ کرے گی۔ مزید برآں، یہ اینٹرپرینورشپ کے ماحول کو فروغ دینے کے طور پر بھی کام کرے گی جو ملک میں پہلے ہی ایک مثبت پیشرفت کا مظاہرہ کررہا ہے۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: