ایپل کے فولڈایبل آئی فونز نے چین میں پائیداری کا ٹیسٹ پاس کرلیا۔

پچھلے ایک سال کے دوران منظر عام پر آنے والی تمام رپورٹس اور لیکس کو دیکھتے ہوئے ایپل بلاشبہ اپنے پہلے فولڈ ایبلز بنا رہا ہے۔ ایک تازہ ترین لیک کے مطابق، ایپل کے فولڈ ایبل آئی فون پروٹوٹائپ میں سے دو کمپنی کے داخلی پائیداری کے امتحانات پاس کر چکے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق، دو فولڈنگ آئی فون پروٹوٹائپس چین کے شینزین میں واقع فاکس کون فیکٹری میں اپنے پائیداری کے ٹیسٹ پاس کرچکے ہیں۔ پائیداری کے امتحان میں کامیاب ہونے والے دونوں موبائل فونز میں پہلا ایک دوہری اسکرین والا ماڈل تھا جس میں دو علیحدہ اسکرینیں تھیں جن کو وسط میں قبضہ کے ذریعہ ایک ساتھ رکھا گیا تھا، یہ مائیکروسافٹ سرفیس ڈؤو کی طرح تھا۔

اس کا مطلب یہ ہوگا کہ اس کا ڈسپلے گلیکسی فولڈ، موٹرولا ریزر یا میٹ ایکس سے کہیں زیادہ پائیدار ہونے والا ہے کیونکہ اس میں ایک نازک مڑنے والی سکرین نہیں ہوگی، بلکہ قبضہ میں دو عام اسکرینیں ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ سرفیس ڈؤو میں بھی باقی فولڈنگ اسمارٹ فونز سے زیادہ پائیدار اسکرین ہے۔

تاہم، دوسرا فون فولڈ ہونے والا مڑی ہوئی اسکرین کا حامل ہے۔ رپورٹ کے مطابق، یہ گلیکسی زیڈ فلپ اور موٹرولا ریزر کی طرح ایک کلیم شیل ڈیوائس ہے۔ اس میں سامسنگ کے ذریعہ فراہم کردہ لچکدار OLED ڈسپلے پینل ہوگا۔ یہ پچھلی صنعت کی رپورٹس کے مطابق ہے جس میں یہ دعوی کیا گیا ہے کہ ایپل نے سن 2020 کے اوائل میں سامسنگ سے بڑی تعداد میں فولڈنگ اسکرینیں حاصل کیں ہیں۔

مزید وضاحتیں یا ڈیزائن جیسی تفصیلات ابھی تک نامعلوم ہیں کیونکہ پروٹو ٹائپس میں صرف ایسے خول ہوتے ہیں جن کے پاس کوئی انٹرنل نہیں ہوتا ہے۔ یہ صرف قبضہ کے طریقہ کار کی پائیداری کو جانچنے کے لئے بنائے گئے تھے۔

مزید تفصیلات منظر عام پر آنے کی توقع نہیں کی جاسکتی ہے کیونکہ کچھ اطلاعات کے مطابق ہم 2022 یا 2023 سے پہلے فولڈ ایبل آئی فون نہیں دیکھ سکیں گے۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: