پی ٹی اے نے گستاخانہ مواد کو پھیلنے سے روکنے کے لئے گوگل اور وکی پیڈیا کو نوٹسز جاری کردیئے۔

پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے) نے گوگل انکارپوریشن اور وکی پیڈیا کو ان کے پلیٹ فارمز کے ذریعے مذموم مضامین کو پھیلانے کے معاملے پر نوٹسز جاری کردیئے ہیں۔

پی ٹی اے نے کہا کہ اسے "موجودہ خلیفہ اسلام” سے وابستہ گمراہ کن تلاش کے نتائج اور گوگل پلے اسٹور پر احمدیہ کمیونٹی کی طرف سے ریلیز کئے گئے قرآن پاک کے غیر تصدیق شدہ ورژن سے متعلق شکایات موصول ہو رہی ہیں۔

انتہائی سنجیدہ نوعیت کا معاملہ ہونے کی وجہ سے، پی ٹی اے نے غیر قانونی مشمولات کو فوری طور پر ختم کرنے کی ہدایت کے ساتھ گوگل انکارپوریشن سے رابطہ کیا ہے۔

ریگولیٹر کے ذریعہ کسی بھی قانونی کارروائی سے بچنے کے لئے مذموم مواد کو ہٹانے کے لئے غیر قانونی آن لائن مواد (طریقہ کار، نگرانی اور حفاظت) ضابطہ 2020 ("قواعد”) کے تحت پلیٹ فارم کو نوٹس جاری کیا گیا ہے۔

حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے تبرکات کی میزبانی اور وکی پیڈیا پر شائع مضامین کے ذریعہ گمراہ کن، غلط، فریب اور دھوکہ دہی سے متعلق معلومات کے بارے میں بھی شکایات موصول ہوئی ہیں جس میں مرزا مسرور احمد کو ایک مسلمان کی حیثیت سے پیش کیا گیا ہے۔

اس معاملے پر کافی پیغام رسانی کے بعد، آخر کار ویکیپیڈیا کو کسی قانونی کارروائی سے بچنے کے لئے مذموم مواد کو ہٹانے کا نوٹس بھیج دیا گیا ہے۔

اگر پلیٹ فارمز اس پر عمل نہیں کرتے ہیں تو پی ٹی اے الیکٹرانک جرائم کی روک تھام ایکٹ 2016 (پی ای سی اے) اور رولز 2020 کے تحت مزید کارروائی شروع کرنے کا پابند ہوگا۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: