ابو ظہبی نے داخلے کے نئے قواعد و ضوابط کے ساتھ بین الاقوامی سیاحوں کا خیرمقدم کرنے کا اعلان کردیا۔

ابو ظہبی نے امارات میں داخل ہونے کے لئے نئے قواعد و ضوابط کا اعلان کردیا ہے۔ کوویڈ-19 کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے صحت اور حفاظت کے تازہ ترین اقدامات کا یہ سلسلہ جمعرات 24 دسمبر سے نافذ العمل ہوگا۔

کمیٹی نے تمام بین الاقوامی مسافروں، رہائشیوں اور سیاحوں کے لئے طریقہ کار کی منظوری دے دی ہے، جس میں ’گرین‘ ممالک کے مسافروں کو قرنطین سے مستثنیٰ قرار دینا اور دوسرے ممالک سے آنے والے مسافروں کے لئے قرنطین کی مدت کو 10 دن تک کم کرنا بھی شامل ہے۔

‘گرین’ فہرست والے ممالک ہر دو ہفتوں میں اپڈیٹ ہوں گے۔ موجودہ گرین فہرست میں درج ذیل ممالک شامل ہیں:

آسٹریلیاگرین لینڈنیوزی لینڈتاجکستان
برونائیہانگ کانگسعودی عربتھائی لینڈ
چینملائیشیاسنگاپورازبکستان
یونانماریشیستائیوانویتنام

یہ قواعد ابوظہبی ایمرجنسی، بحران اور آفات سے متعلق کمیٹی کی طرف سے آئے ہیں، جس نے "منظور شدہ احتیاطی اقدامات کے مطابق معاشی، سیاحی اور تفریحی سرگرمیوں کی آپریشنل صلاحیت میں اضافہ” کی منظوری دی ہے۔

بین الاقوامی مسافروں کو اپنے طے شدہ روانگی کے 96 گھنٹوں کے اندر اندر موصول ہونے والا پی سی آر کا منفی نتیجہ پیش کرنے اور امارات میں داخل ہونے کے بعد دوسرا پی سی آر ٹیسٹ کروانے کی ضرورت ہوگی۔

ٹیسٹ کا منفی نتیجہ موصول ہونے کی صورت میں ‘گرین’ ممالک کے مسافروں کو امارات میں داخل ہونے کی اجازت ہوگی، جب کہ دوسرے ممالک کے مسافروں کو دس دن کے لئے خود کو قرنطینہ میں رکھنا پڑے گا۔ ہر دو ہفتوں میں گرین فہرست کے ممالک کی درجہ بندی کا جائزہ لیا جائے گا۔

دوسری تبدیلیوں میں ابوظہبی میں داخل ہونے کے لئے استعمال ہونے والے منفی نتیجے کے پی سی آر یا ڈی پی آئی ٹیسٹ کی صداقت کو 48 گھنٹوں سے بڑھا کر 72 گھنٹے کردیا گیا ہے۔ چوتھے اور آٹھویں دن میں کیے جانے والے ٹیسٹوں کی جگہ اب چھٹے دن ٹیسٹ کروانا لازمی ہوگا اور اگر مسلسل 12 دن یا اس سے زیادہ قیام کر رہے ہیں تو بارہویں دن لازمی طور پر دوسرا ٹیسٹ دینا ہوگا۔

مثبت کیس کے ساتھ رابطے میں رہنے والے افراد کے لئے قرنطینہ کی مدت کو کم کر کے دس دن کردیا گیا ہے، بشرطیکہ آٹھویں دن پی سی آر ٹیسٹ لیا جائے جس کا نتیجہ منفی ہو۔

صنعتی زون اور انتہائی آبادی والے علاقوں کے مکینوں کے لئے وقتا فوقتا اسکریننگ پروگراموں کے لئے بھی منظوری دی گئی ہے، نیز ابو ظہبی کے باہر صیحہ (SEHA) کے  ٹیسٹنگ مراکز کی گنجائش میں اضافہ اور داخلی مقامات پر ٹیسٹنگ مراکز بند کرنے کی بھی منظوری دی گئی ہے۔

دریں اثنا، ابوظہبی میں داخل ہونے والے متحدہ عرب امارات کے تمام شہریوں اور رہائشیوں کے لئے نئے قواعد جمعرات 24 دسمبر کو نافذ ہوں گے۔

ابو ظہبی ایمرجنسی، بحران اور آفات کمیٹی نے منگل، 22 دسمبر کو اعلان کیا ہے کہ تمام شہریوں اور رہائشیوں کو لازمی طور پر پی سی آر یا ڈی پی آئی ٹیسٹ دینا ہوگا اور ابوظہبی میں داخلے کے 72 گھنٹوں کے اندر منفی نتیجہ وصول کرنا چاہئے۔ اس کے بعد انھیں داخلے کے دن چھٹے دن پی سی آر ٹیسٹ دینا لازمی ہوگا، اگر وہ چھ سے زیادہ دن کا قیام کررہے ہیں اور نہ کروانے کی صورت میں جرمانہ عائد ہوگا۔

وہ لوگ جنہوں نے قومی ویکسی نیشن پروگرام کے لئے رضاکارانہ خدمات انجام دیں اور فیز 3 کے کلینیکل ٹرائلز میں رضاکارانہ طور پر جن کی الحوسن ایپ پر لیٹر E یا سنہری ستارے کی شناخت کا نشان ہے، ان کو اس سے مستثنیٰ قرار دیا گیا ہے۔ ابو ظہبی امارات میں داخل ہوتے وقت انہیں ہنگامی گاڑیوں کی لینیں استعمال کرنے کی بھی اجازت ہے۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: