اوپو نے سامسنگ گلیکسی زیڈ فلپ جیسے فولڈ ایبل فون کا پیٹنٹ دائر کردیا۔

اسمارٹ فون انڈسٹری کے بہت سے ماہرین کا خیال ہے کہ فولڈ ایبل فون ہی مستقبل ہیں۔ اس کو دھیان میں رکھتے ہوئے، بہت سے اسمارٹ فون OEMs اس بینڈ ویگن کود رہے ہیں اور اپنا اپنا فولڈ ایبل فون لانچ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ تاہم، بہت سی کمپنیاں ابھی اپنے فولڈ ایبل فونز کے ورژن پیٹنٹ کر رہی ہیں اور ان کے پاس عملی ورژن تیار نہیں ہے۔ اوپو ان میں سے ایک ہے۔

حال ہی میں، عالمی دانشورانہ املاک کی تنظیم (WIPO) کے پاس دائر کمپنی کا ایک پیٹنٹ انٹرنیٹ پر سامنے آیا ہے۔ دستاویز میں سامسنگ گلیکسی زیڈ فلپ جیسے فولڈنگ فون کی تفصیلات ہیں جو گیئرز کے ساتھ گھومنے والے قبضے کا استعمال کرتا ہے، بالکل اسی طرح جیسے سامسنگ اپنے فولڈایبل فونز کے لئے استعمال کرتا ہے۔ قبضہ فون کو چار مختلف زاویوں پر فولڈ کرنے کی اجازت دے گا۔

عجیب بات یہ ہے کہ، اس اسمارٹ فون میں باہری جانب کا کور ڈسپلے نہیں ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ جب فون فولڈ ہوجائے گا تو صارف نوٹیفیکیشنز نہیں دیکھ سکے گا اور نہ ہی یہ شناخت کر سکے گا کہ کون فون کر رہا ہے جب تک وہ فون مکمل کھول نہیں لیتے۔ مارکیٹ میں لگ بھگ تمام فولڈایبل فونز باہر کی طرف چھوٹے ڈسپلے اور کھلنے کے بعد مین ڈسپلے کے ساتھ آتے ہیں۔

اوپو کے پیٹنٹ فون میں روایتی مین ڈسپلے پنچ ہول کے ساتھ ہے۔ ذیل میں لیٹس گو ڈیجیٹل کے تخلیق کردہ کچھ رینڈرز ہیں۔ رینڈرز کے مطابق، ڈیوائس میں ٹرپل سینسر کا ریئر کیمرا سیٹ اپ ہے جو کہ گلیکسی زیڈ فلپ اور موٹرولا ریزر کے مقابلے میں کہیں زیادہ ہے۔

چونکہ فولڈ ایبل فون کا ڈیزائن ابھی تک مکمل نہیں ہے اور اس میں کچھ اہم اجزاء کی کمی ہے، لہذا ممکنہ طور پر کمپنی فی الحال اس ہینڈسیٹ کو پروڈکشن کے مرحلے میں نہیں بھیجے گی۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: