آئی فون 12 کے کیمرے صرف ایپل کے تکنیکی ماہرین ہی تبدیل کر سکتے ہیں، لیکن 12 پرو اس سے مثتثناء ہے

جب ایپل نے آئی فون 5 ایس میں فنگر پرنٹ ریڈر شامل کیا تھا تو اس نے کسی مجاز ٹیکنیشن کے علاوہ کسی اور کے ذریعہ اس کو تبدیل کرنا ناممکن بنا دیا تھا۔ یہ بات عقل میں آتی ہے کیونکہ ایک جعلی ٹیکنیشن سیکیورٹی کو ناکارہ بنا سکتا تھا۔ لیکن جیسے جیسے وقت گذرتا گیا آئی فونز کے مزید پارٹس کو تبدیل کرنا مشکل سے مشکل ہوتا چلا گیا۔

اور اب آئی فون 12 کے پوسٹ مارٹم اور جانچ کے دوران، آئی فکس اٹ نے محسوس کیا کہ کیمرہ نکال کر اسے دوسرے فون کے ویسے ہی ماڈیول سے تبدیل کرنے کی وجہ سے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں۔ اور اسکرینوں کو تبدیل کرنے پر بھی آپ کے آئی فون پر غلطی کی یہ اطلاع مل سکتی ہے کہ "ڈیوائس اس بات کی توثیق کرنے سے قاصر ہے کہ اس آئی فون میں حقیقی ایپل ڈسپلے موجود ہے”۔

حقیقتاً، یہ ایک بگ کی طرح لگتا ہے۔ تبدیل ہونے کے بعد کیمرا کام تو کرتا ہے، لیکن مستقل مسائل پیدا کرتا ہے۔ یہ کبھی کبھار ہینگ ہوجاتا ہے، کچھ کیمرا موڈز کام کرنا بند کردیتے ہیں اور الٹرا وائیڈ کیمرا فوٹو موڈ میں آن ہونے سے انکار کرتا ہے۔ حیرت کی بات ہے، یہ ویڈیوز کیلئے ٹھیک کام کرتا ہے۔

نیچے دی گئی وڈیو میں ان مسائل کا مشاہدہ کریں:

اس سے بھی زیادہ حیرت کی بات یہ ہے کہ آئی فون 12 پرو کے ساتھ اسی طریقہ کار اختیار کرنے میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے – تبدیلی کے بعد نیا ماڈیول بالکل ٹھیک کام کرتا ہے، وائیڈ، الٹرا وائیڈ، ٹیلی فوٹو لینسز اور کیمرے کے تمام موڈز بھی صحیح کام کرتے ہیں۔

آئی فکس اٹ وضاحت کرتا ہے کہ ایپل نے اپنی تربیت کے دستورالعمل میں تبدیلی کی ہے۔ آئی فون 12 سیریز کے ساتھ شروع کرتے ہوئے، ڈسپلے اور کیمرا کو تبدیل کرنے کے لئے سسٹم کنفیگریشن ٹول کا استعمال کرنا ضروری ہے، جو نئے اجزا کو صحیح طریقے سے کام کرنے کیلئے دوبارہ پروگرام کرنے سے پہلے ایپل کے سرورز سے رابطہ قائم کرے گا۔

اس سے پہلے (XR / XS جنریشن کی شروعات سے)، صرف بیٹریاں تبدیل کرتے وقت اس کی ضرورت ہوتی تھی۔ حفاظتی اجزاء جیسے ٹچ آئی ڈی یا فیس آئی ڈی (جو ڈسپلے میں سرایت کیا گیا ہے اور اسے الگ سے تبدیل نہیں کیا جاسکتا ہے) کو تبدیل کرنا بھی اب بالکل مختلف ہے اور اس کے لئے سیکیورٹی انکلیو کو دوبارہ پروگرام کرنے کی ضرورت پڑتی ہے۔

یوٹیوب پر سب سے بڑے ٹیک ڈیوائسز کی مرمت کے چینلز میں سے ایک چینل چلانے والے ہیو جیفریز کو بھی انہی مسائل کا سامنا کرنا پڑا جیسا کہ آپ نیچے ویڈیو میں دیکھ سکتے ہیں۔ کیمرے کے بارے میں آپ وڈیو کو 8:50 منٹ سے دیکھ سکتے ہیں، لیکن اگر آپ پوری ویڈیو دیکھ سکتے ہیں تو آئی فون 12 کی مرمت کی اہلیت (یا نااہلی) کا زیادہ گہرائی سے اندازہ کرسکتے ہیں۔

ماخذ: آئی فکس اٹ

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: