پاکستان میں زینب الرٹ ایپ ریلیز کر دی گئی ہے۔

وزارت انسانی حقوق نے بچوں کی مدد اور حفاظت کے لئے، پاکستان پیپلز پلیٹ فارم کے ساتھ شراکت میں، آج ملک بھر میں زینب الرٹ ایپ کی نقاب کشائی کی۔

انسانی حقوق کی وزارت نے ایک ٹویٹ میں کہا، "زینب الرٹ ایک ہنگامی رسپانس سسٹم تشکیل دیتی ہے جو ریاست اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہر سطح پر متحرک کرتی ہے۔”

انسانی حقوق کی وزیر شیریں مزاری نے بتایا کہ، زینب الارم رول کے نفاذ کے حصے کے طور پر، پی ایم ڈی یو کے اشتراک سے زینب الرٹ ایپ متعارف کروائی گئی ہے۔ انہوں نے کہا ، "ایم او ایچ آر کی جانب سے نئی ہیلپ لائن 1099 ابھی بھی کھلی رہے گی۔”

آج (جمعرات) کو پاکستان سٹیزن پلیٹ فارم کے ایک حصے کے طور پر، حکومت زینب الرٹ اسمارٹ فون ایپلی کیشن کو متعارف کرانے کا بھی ارادہ رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان میں بچوں سے زیادتی کے معاملے کی حساسیت کو سمجھتی ہے اور یہ پاکستان کے اہم اقدامات میں سے ایک ہے۔

مزاری نے مزید کہا، "یہ بچوں کے حقوق کے بارے میں معاشرے میں شعور اجاگر کرنے اور ان کو باشعور بنانے کے ساتھ ساتھ بچوں کے تشدد کی روک تھام اور ان کے تحفظ کے لئے ریاستی قوانین اور فریم ورک کی تشکیل کر رہی ہے۔”

وزیر نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ بچوں پر تشدد کے معاملے کو سنجیدگی سے لیں اور ہیلپ لائن 1099 پر اس طرح کے واقعات کی اطلاع دیں۔

تبصرہ کریں

%d bloggers like this: