گوگل نے وعدہ کیا ہے کہ اینڈرائیڈ 12 میں تھرڈ پارٹی ایپ اسٹورز کو انسٹال کرنا آسان بنا دے گا۔

اگر آپ نے اس خبر کو ابھی تک نہیں سنا تو بتاتے چلیں کہ ایپک گیمز (Epic Games) کا پچھلے کچھ عرصے سے ایپل اور کسی حد تک گوگل کے ساتھ بھی ان دونوں کے موبائل آپریٹنگ سسٹم اور متعلقہ ایپ اسٹورز کی پالیسیوں کو لے کر تنازعہ چل رہا ہے۔ پریشانی کی ایک وجہ یہ ہے کہ دونوں کمپنیاں ڈویلپرز کے لئے اپنی ایپ کو مختلف طریقوں سے تقسیم کرنا بہت مشکل یا قریب قریب ناممکن بنا دیتے ہیں، یوں ان میں سے بہت سے ڈویلپرز ڈیجیٹل فروخت کے ذریعے حاصل ہونے والی آمدنی کا 30 فیصد حصہ گوگل اور ایپل کو دینے پر مجبور ہو جاتے ہیں۔

اگرچہ ایپل نے اس معاملے میں لچک دکھانے کا کوئی بھی اشارہ نہیں کیا، لیکن گوگل نے آج اینڈرائیڈ ڈویلپرز کے لئے کچھ اہم تبدیلیوں کا اعلان کیا ہے۔ "ہم گوگل پلے میں بہتری لانے کے لئے ڈویلپرز کی آراء سن رہے ہیں” کے عنوان سے ایک بلاگ پوسٹ میں، کمپنی نے کہا ہے کہ اگلے سال کے اینڈرائیڈ ورژن یا اینڈرائیڈ 12 کے ورژن میں صارفین کو گوگل پلے کے علاوہ دوسرے ایپ اسٹورز انسٹال کرنا بھی آسان ہوجائے گا، اس طرح ڈویلپرز کو مزید ایسے اختیارات ملیں گے کہ وہ اپنی اینڈرائیڈ ایپس کو کس طرح تقسیم کرتے ہیں۔ گوگل نے اس بارے میں کوئی تفصیل نہیں بتائی لیکن یہ ایک طرح سے ایک خوشخبری ہی ہونی چاہئے۔

گوگل نے یہ بھی اعلان کیا کہ اس نے گوگل پلے اسٹور کے لئے اپنی ادائیگی کی پالیسی کو اپ ڈیٹ کر کے یہ واضح کردیا ہے کہ کوئی بھی ڈویلپر جو پلے اسٹور پر ایپس یا ایپس کے اندر اشیاء فروخت کرتا ہے اسے گوگل کا بلنگ سسٹم استعمال کرنے اور متعلقہ محصول کی کٹوتی کو ادا کرنے کی ضرورت ہے۔ کہا جائے تو یہ ایک تبدیلی نہیں ہے، بلکہ اس پالیسی کی وضاحت ہے جو پہلے سے موجود تھی اور گوگل کا کہنا ہے کہ صرف 3 فیصد ڈویلپرز ڈیجیٹل سامان فروخت کر رہے ہیں جن کو گوگل کے بلنگ سسٹم کو استعمال کرنے کی ضرورت ہے۔

گوگل نے یہ بھی کہا ہے کہ جب تک ڈویلپرز صارفین کے ساتھ قیمتوں کا تبادلہ کرتے ہیں اس وقت تک یہ پابندیاں عائد نہیں کررہے ہیں جب تک کہ یہ خود ایپ میں نہیں ہوتا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ اگر ڈویلپرز اپنی ویب سائٹ پر یا کسی اور ایپ اسٹور میں قیمتوں کے مختلف اختیارات پیش کرتے ہیں تو وہ صارفین کو ای میل یا کسی اور چینل کے ذریعے اس کے بارے میں معلومات دے سکتے ہیں۔ تاہم، ایسا معلوم ہوتا ہے کہ گوگل کے الفاظ کے مطابق ایپ میں ہی اس قسم کے مواصلات کی اجازت نہیں ہے۔

تیسری پارٹی کے ایپ اسٹورز کو زیادہ آسانی سے انسٹال کرنے کی اہلیت ایپک گیمز (Epic Games) جیسے ڈویلپرز کے لئے خوشخبری ہونی چاہئے، جو گوگل کے ساتھ اپنی آمدنی کا اشتراک نہ کرنے پر ڈٹے ہوئے ہیں۔ یہ دیکھنا باقی ہے کہ کیا ایپل بھی اسی قسم کے کسی قابل تعریف طریقے کا اطلاق کرنے پر آمادہ ہو گا۔

تبصرہ کریں