ایپل کے آنے والے آئی فون 9، Xs اور Xs پلس کی متوقع چند نئی خصوصیات کا جائزہ

اب تک مختلف ذرائع سے ایپل کے اگلے سال آنے والے آئی فون 9، Xs اور Xs پلس کی متوقع خصوصیات کے بارے میں کافی معلومات مل چکی ہیں۔ یہ کچھ ایسے ذرائع ہیں جو ایپل کے آئندہ منصوبوں کے بارے میں ہونے والی افواہوں کی جنگ میں اپنا لوہا منوا چکے ہیں خصوصا جب نئے آنے والے آئی فونز یا آئی پیڈز کی بات ہوتی ہے۔ بہت سالوں بعد ایک بہت ہی منفرد فون جو اس وقت لاکھوں صارفین کے ہاتھوں میں ہے، متعارف کروانے کے بعد یہ سوچے بنا نہیں رہا جا سکتا کہ اب آئی فون ایکس کے بعد کیا ہو گا؟

کیا ایپل اپنی سمت کو تیزی کے ساتھ تبدیل کر کے چہرے کی شناختی (Face ID) بائیومیٹری کے ساتھ مکمل طور پر نوچی ہینڈسیٹ کی طرف جائے گا، یا پھر کچھ نئی اضافی خصوصیات کے ساتھ اپنے آپ کو اور زیادہ متنوع بنائے گا؟ آئی فون ایکس نے دراصل مزید توقعات اور سوالات پیدا کر دیئے ہیں، لہذا مزید کوئی عہدوپیماں کئے بغیر یہاں ہم آپ کو 2018 کے آئی فون کے ماڈلز میں آنے والی متوقع خصوصیات کے بارے میں وہ چیدہ چیدہ معلومات فراہم کریں گے جو ان افواہوں، تجزیہ کاروں اور "سپلائی چین کے ذرائع” سے حاصل کی گئی ہیں جن کا براہ راست ان معاملات سے واسطہ ہے۔

ڈیزائن اور ڈسپلے
OLED یا LCD ڈسپلے، نشان یہاں رہنے کے لئے یہاں ہے

jdi_full_active_flexible_lcd
آئی فون 9 میں ممکنہ طور پر JDI کی فل ایکٹو لچکدار LCD ڈسپلے ٹیکنالوجی استعمال ہو گی

ممکنہ طور پر ایپل 2018 میں تین فونز جاری کرے گا، اور ان سب میں ایک ٹروڈیپتھ () فرنٹ کیمرا ہونے کے ساتھ ان میں سے ایک LCD اسکرین پینل کے ساتھ نسبتا سستا ماڈل بھی ہو گا۔ اس بات کا یقین دہانی کے ساتھ کہ اگلے سال کے آئی فون ماڈلز تین سائز کے ڈسپلے میں ہونگے – 5.8 انچ، 6.1 انچ اور 6.46 انچ، اس بات کا بھی قوی امکان ہے کہ ہم ایک آئی فون ایکس (یا XI، یا جو بھی ایپل اس کا نام رکھے گی) کے علاوہ بڑی اسکرین کے چاہنے والوں کے لئے ایک بڑا آئی فون ایکس پلس بھی دیکھیں گے۔ البتہ ڈیزائن کے کم سے کم اگلے دو سالوں تک اسی طرح رہنے کے امکانات ہیں جب تک ایپل اسے پوری طرح سے کچھ مختلف نہ کر دے۔

پروسیسر اور میموری
TSMC کی طرف سے بنا‏ئی گئی ایک 7nm A12 چپ اور 512GB کی آئی فون سٹوریج ہوسکتی ہے

samsung_512_gb
سام سنگ نے 512 جی بی موبائل اسٹوریج متعارف کروا دی

یہاں یہ کہنے کی ضرورت نہیں ہے کہ ہم 2018 کے آئی فونز میں 7nm ایپل A12 چپس کی توقع رکھتے ہیں، کیونکہ اس بات کا واضح اشارہ یہ ہے کہ ان چپ سیٹس کی پروڈکشن نوڈ موسم بہار کے فلیگ شپس کے بجائے اگلے برس کی دوسری شش ماہی میں دستیاب ہو گی، جیسا کہ ہم امید کر رہے تھے۔ ویسے تو A11 کی پرفارمنس بھی بہت شاندار ہے، اور گیلکسی S9 سنیپ ڈریگن 845 اور ایگزائنوس 9810 کی طرح 10nm چپ سیٹس کے ساتھ تشکیل پا رہا ہے، لہذا ایپل صرف اپنے ڈیوائسز کی سیلیکون لائن پر اضافی خصوصیات شامل کرنے پر توجہ مرکوز کرنے کا فیصلہ کر سکتا ہے، جیسا کہ افواہوں میں گردش کرتا گیگابٹ انٹیل موڈیم۔

ہم اس سال کے ماڈلز کے مقابلے میں میموری میں کوئی تبدیلی آنے کی توقع نہیں کر رہے ہیں، اگرچہ ایپل ہمیں حیرت انگیز طور پر چونکا سکتا ہے، لیکن ایک افواہ گردش میں ہے کہ ایپل شاید آئی فون ایکس ماڈل کے جانشین کے لئے 512 جی بی کے ورژن تک بھی جا سکتا ہے۔ سام سنگ نے پہلے ہی موبائل فونز کے لئے اس طرح کی فلیش میموری چپ کا اعلان کر دیا ہے، لہذا یہ یقینی طور پر قابل عمل ہے، لیکن فی الحال ہم اس ماڈل کی قیمت کا تعین نہیں کر سکتے۔

کیمرے

آئی فونز کے تین متوقع ماڈلز کے کیمروں کے بارے میں ابھی تک بہت زیادہ تفصیلات نہیں ملی ہیں، لیکن ہم اس کے سب سے کم قیمت والے ماڈل میں اس کی قیمت کو برقرار رکھنے کے لئے موجودہ آئی فون 8 پلس جیسے دوہرے کیمروں کے ساتھ آنے کی توقع کر سکتے ہیں، جبکہ آئی فون Xs اور Xs پلس کے کیمرے موجودہ آئی فون X کی طرح کے دوہرے OIS کٹ، ممکنہ سینسر اور/یا آپٹکس اپ گریڈ کے حامل ہو سکتے ہیں۔

بیٹری
iphone_8_9_battery_shape_jp_morganاگلے سال کے آئی فونز ایک ہی ٹکڑے کی ایل کی شکل کی مزید صلاحیتوں کی حامل بیٹری کے ساتھ آ سکتے ہیں

iphone_x_battery
اگلے سال کے آئی فون X کے ماڈل میں بیٹری کے دو ٹکڑے ایک ہو سکتے ہیں

موجودہ آئی فون X کے ماڈل میں ایپل نے ایک ایل (L) کی شکل کی بیٹری متعارف کروائی ہے جو کہ دو علیحدہ علیحدہ ٹکڑوں پر مشتمل ہے جن کو ایک چپ کے علاوہ دوسری چھوٹے پیمانے کی تکنیکوں کے ذریعے جوڑا گیا ہے۔ اس طرح ایپل نے آئی فون X کے ماڈل میں بیٹری کی صلاحیت کو 30 فیصد بڑھا کر 2716 ایم اے ایچ تک پہنچا دیا۔ لیکن باوثوق ذرائع کے مطابق 2018 کے آئی فونز X کی سیریز کے ماڈل میں ایک سنگل ٹکڑے کی ایل کی شکل کی 2900 سے 3000 ایم اے ایچ کی جبکہ 6.5 انچ اسکرین پینل کے ماڈل میں 3300 سے 3400 ایم اے ایچ کی اور 6.1 انچ ایل سی ڈی اسکرین پینل کے ماڈل میں 2850 سے 2950 ایم اے ایچ کی سنگل ٹکڑے والی مستطیل (rectangular) بیٹری شامل کرنے کی اطلاعات ہیں۔
اس طرح آئی فون 9 کے ماڈل میں ایپل اس کی قیمت کو کنٹرول میں رکھتے ہوئے اس میں اضافی بیٹری کی صلاحیت شامل کرنے کی کوشش کرے گا۔

کیمیکل انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے ایک افسر کے مطابق ان بیٹریوں کی ماس پروڈکشن کے لئے ایل جی کیم (LG Chem) نے کثیر سرمایہ کاری کر کے پلانٹ لگانے شروع کر دیئے ہیں جو اگلے سال کی ابتداء میں انتہائی بڑے پیمانے پر ان بیٹریوں کی پروڈکشن شروع کر دیں گے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ایپل نے غالبا اپنے اگلے سال کے آئی فون 9 کے ماڈلز کی بیٹریوں کے لئے ایل جی کیم کو چنا ہے۔

کنیکٹیوٹی
2018 کے لئے گیگابٹ LTE کی رفتار اور ممکنہ طور پر ایک ڈبل سم آئی فون ورژن کی اطلاعات ہیں

qualcomm_x16_modem_iphone_x
Qualcomm کی X6 موڈیم (اندرونی) گیگابٹ LTE گیئر Intel’g کرنے کا راستہ دے سکتا ہے

دیکھا جا رہا ہے کہ ایپل اس وقت کوالکوم (Qualcomm) کے ساتھ لاتعداد پیٹنٹ کی جنگوں میں پھنسا ہوا ہے اور اس کے سیلولر موڈیم جیسے دوسرے پرزوں سے چھٹکارا پانے کی کوشش کر رہا ہے۔ اسی وجہ سے وہ اس وقت اپنے بہت سے آئی فون ماڈلز میں جی ایس ایم نیٹ ورکس کے لئے مقرر کردہ انٹیل کے موڈیمز کا استعمال کر رہا ہے۔ اسی طرح آئی فون X بھی اس رد و بدل سے محروم نہیں ہے، اور کوالکوم کے X16 LTE موڈیم اور انٹیل کے XMM7480 کے ساتھ دونوں ورژن میں آتا ہے۔ تاہم ایپل اگلی نسل کے آئی فونز کے لئے گیگابٹ ایل ٹی ای اور 5 جی موڈیمز پر انٹیل کے ساتھ مل کر کام کررہا ہے اور شاید دوہری سم ماڈل پر بھی۔

قیمت
اگلے سال ایپل ہر ایک کی پہنچ کے اندر قیمتوں کے حامل آئی فونز جاری کر سکتا ہے جو 649 ڈالرز کی قیمت سے شروع ہوں گے

باوثوق ذرائع کے مطابق LCD ڈسپلے اور دھاتی جسم کے ساتھ سب سے سستا 6.1 انچ کا آئی فون 9 (یا 8s) ماڈل امریکہ میں 649 ڈالرز سے 749 ڈالرز کے درمیان کی قیمت میں متوقع ہے۔ کم قیمتوں والے اجزاء کے استعمال کی وجہ سے آئی فون X کے مقابلے میں ممکنہ طور پر آئی فون Xs کی قیمت کم ہو گی اور ایک اندازے کے مطابق اس کے بیس ورژن کی قیمت 799 ڈالرز جبکہ 6.46 انچ کے او ایل ای ڈی پینل کے حامل Xs پلس کی قیمت 999 ڈالرز سےشروع ہو۔ آئی فون Xs پلس کے 512 جی بی ورژن کے لئے ایپل کی قیمتوں کا تعین ہم آپ پر چھوڑتے ہیں۔

تبصرہ کریں